بنیادی صفحہ / کاروبار / المصباح و الفلاح فاؤنڈیشن کے زیر اہتمام ممبرا میں تعلیمی مظاھرہ

المصباح و الفلاح فاؤنڈیشن کے زیر اہتمام ممبرا میں تعلیمی مظاھرہ

عظمیٰ ناہید صاحبہ خطاب کرتے ہوئے جبکہ عبد اللہ فیصل کو بھی دیکھا جاسکتا ہے

عظمیٰ ناہید صاحبہ خطاب کرتے ہوئے جبکہ عبد اللہ فیصل کو بھی دیکھا جاسکتا ہے

ممبرا(پریس ریلیز ) ماہنامہ المصباح و الفلاح فاؤنڈیشن کے زیر اہتمام طلبہ و طالبات نیز خواتین کا تعلیمی مظاہرہ نور باغ ھال کوسہ ممبرا میں منعقد ہوا جس میں طلباء وطالبات نے قرات، تقریر، نظم،نعت پیش کیا.ساتھ ہی اسلامک کو ئز کا بھی انعقاد ہواجس میں تقریبا پانچ سو سےزیادہ طلباء و طالبات وخواتین نے حصہ لیاجبکہ ہزار سے زیادہ مردوخواتین نے بطور سامعین شرکت کی. واضح رہے کہ تمام مسابقین کو انعامات دئے گئے.پروگرام تینحصوں پر مشتمل تھا. صبح ۸ بجے سے بارہ بجے تک پھر ۲ بجے سے عصر تک مغرب بعد علماء کرام ودانشوروں نے اپنے تاثرات بھی پیش کئے اور خطاب بھی فرمایا.ممتازعالم دین اور دارالھدیٰ یوسف پور کے پرنسپل مولانا عبد الرحیم امینی صاحب نے ولولہ انگیز خطاب فر ماتے ہوئےکہا کہ’’ اللہ کے فضل وکرم سے مسلما نوں نے تعلیمی میدان میں پیش رفت کی ہے یہ خوش آئند بات ہے جبکہ اس پروگرام میں آکر مجھے دلی خوشی ہوئی ہےمیں مبارکباد پیش کرتا ہوں ڈاکٹر عبد اللہ فیصل کو کہ انہوں نے اتنا شاندار پروگرام منعقد کیا۔ وہ ایک محنتی فعال اور صلاحیت مند شخص ہیں. وہ ایک صحافی ہیں اور بہترین مقرر بھی المصباح جیسا معیاری رسالہ نکالنا بہت ہی عظیم کارنامہ ہے. اقراء اسکول کا قیام بہت بڑا کام ہےاور اس میں زیر تعلیم طلبہ وطالبات کی ہمت افزائی کی و معلمات کو بھی آپ نے سراہا کہ اقراء اسکول کی ترقی آپ اساتذہ کے ہاتھوں میں ہے‘‘.امینی صاحب نے کہا کہ’’ فیصل زما نہء طالب علمی سے ہی بہت محنتی تھے وہ سیاسی و سماجی سرگرمیوں میں حصہ لیتے تھے آج سماج کو ایسے ہمہ جہت شخص کی ضرورت ہے جو ملت کی صحیح رہنمائی کر سکے.افراد کے ہاتھوں میں ہےاقوام.کی تقدیر ،ہر فردہے ملت کے مقدر کا ستارہ۔مولانا نے کہا کہ’’ عورتوں نے ہمیشہ نمایا ں کردار ادا کیا ہے اور امہات المومنین صحابیات ودیگر خواتین نے ہر میدان میں اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوایا ہے اور علمی ادبی تصنیفی، تالیفی کارنامے انجام دئیے ہیں. جنہیں فراموش نہیں کیا جاسکتا‘‘۔اقراء فاؤنڈیشن کی صدر عظمیٰ ناہید صاحبہ نے عورتوں کے مسائل پر روشنی ڈالی اور کہا کہ’’ آج خواتین کو ہر میدان میں آگے آنے کی ضرورت ہے وہ خود کفیل بنیں ہنر مند بنیں تدریسی تصنیفی تالیفی اور صحافتی میدان میں آکر کام کریں.عورتوں نے عظیم کار نامے انجام دئے ہیں تاریخ کی کتابوں میں درج ہے کہ مرد ایک فرد کی اصلاح کرتا ہے جبکہ عورت پورے گھر کی اصلاح کر سکتی ہے.معاشرے کی تشکیل و ارتقاء میں خواتین کا زبردست ہاتھ ہے‘‘.

تعارف: نمائندہ خصوصی

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*