ماریشس کی ترقی کے لیے ہندوستان پرعزم : پی ایم مودی

mauritious

انئی دہلی

وزیر اعظم نریندر مودی اور ماریشس کے وزیر اعظم پروند کمار جگن ناتھ نے آج ماریشس میں مشترکہ طور پر سوشل ہاؤسنگ یونٹس پروجیکٹ کا افتتاح کیا۔ یہ پروجیکٹ ہندوستان اور ماریشس کے درمیان متحرک ترقیاتی شراکت داری کے حصے کے طور پر عمل میں لایا گیا ہے۔

اس موقع پر دونوں وزرائے اعظم نے دو دیگر پروجیکٹوں کے لئے سنگ بنیاد رکھنے کی ورچوئل تقریب میں بھی حصہ لیا -ان میں سے کا تعلق ایک جدید ترین سول سروس کالج ہے اور دوسرا 8 میگاواٹ کا سولر پی وی فارم ہے۔ ان کی تعمیر ہندستان کی ترقیاتی امداد کے حصے کے طور پر کی جا رہی ہے۔ تقریب کا انعقاد ویڈیو کانفرنس کے ذریعے کیا گیا۔

ماریشس میں یہ تقریب ماریشس کے پی ایم او احاطے میں کابینہ کے وزراء اور حکومت ماریشس کے سینئر عہدیداروں سمیت معززین کی موجودگی میں منعقد ہوئی۔ اس موقع پر اپنے خطاب میں وزیر اعظم مودی نے ہندستان کی ترقیاتی امداد کو تقویت دینے والے خیالات پر روشنی ڈالی جو دوستوں کی ضروریات اور ترجیحات اور خودمختاری کے احترام سے متشرح ہیں اور ساتھ ہی اس کا مقصد لوگوں کی فلاح و بہبود اور ملک کی صلاحیتوں کو بڑھانا ہے۔

وزیر اعظم نے قوم کی تعمیر میں سول سروس کالج پروجیکٹ کی اہمیت کا اعتراف کیا اور مشن کرم یوگی کے علم میں شراکت کی پیشکش کی۔ وزیر اعظم نے ون سن ون ورلڈ ون گرڈ (او ایس او او او جی) پہل کو یاد کیا جو انہوں نے اکتوبر 2018 میں انٹرنیشنل سولر الائنس کی پہلی اسمبلی میں کی تھی اور کہا کہ 8 میگاواٹ سولر پی وی فارم پراجیکٹ سے آب و ہوا کے محاذ پر13000 ٹن سی او2 کے اخراج سے بچنے کی آزمائشوں کو کم کرنے میں مدد ملے گی جس کا ماریشس کو سامنا ہے۔

اپنی تقریر میں وزیر اعظم پروند جگن ناتھ نے ماریشس کو مالی امداد سمیت وسیع پیمانے پر امداد کے لئے ہندوستان کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم مودی کی قیادت میں ہندوستان اور ماریشس کے تعلقات نے نئی بلندیوں کو چھوا ہے۔

خیال رہے کہ حکومت ہند نے مئی 2016 میں ماریشس کی حکومت کو خصوصی اقتصادی پیکیج کے طور پر 353 ملین امریکی ڈالر کی مدد کی تھی تاکہ دیگر منصوبوں کے علاوہ ماریشس کی حکومت کی طرف سے شناخت کردہ پانچ ترجیحی پروجیکٹوں کو انجام تک لایا جائے۔ یہ پروجیکٹ حسب ذیل تھے: میٹرو ایکسپریس پروجیکٹ، سپریم کورٹ کی عمارت، نیو ای این ٹی ہسپتال، پرائمری اسکول کے بچوں کو ڈیجیٹل ٹیبلٹس کی فراہمی اور سوشل ہاؤسنگ پروجیکٹ۔

آج سوشل ہاؤسنگ پروجیکٹ کے افتتاح کے ساتھ ہی ایس ای پی کے تحت تمام ہائی پروفائل پروجیکٹ عمل میں لے آئے گئے ریڈوئٹ میں واقع سول سروس کالج پروجیکٹ کو 4.74 ملین امریکی ڈالر کے گرانٹ کے ذریعے 2017 میں ماریشس کے وزیر اعظم پراوِند جگن ناتھ کے ہندستان کے دورے کے دوران دستخط کردہ ایک مفاہمت نامے کے تحت مالی اعانت فراہم کی جا رہی ہے۔

ایک بار تعمیر ہونے کے بعد، یہ مختلف تربیتی اور ہنرمندی کے فروغ کے پروگرام شروع کرنے کے لئے ماریشس کے سرکاری ملازمین کے لئے مکمل طور پر فعال سہولت فراہم کرے گا۔ اس سے ہندوستان کے ساتھ ادارہ جاتی روابط مزید مضبوط ہوں گے۔ آٹھ میگاواٹ سولر پی وی فارم پروجیکٹ میں 25000 پی وی سیلز کی تنصیب شامل ہے تاکہ سالانہ تقریباً 14 جی ڈبلیو ایچ سبز توانائی پیدا کی جا سکے۔

اس کا مقصد تقریباً 10 ہزار ماریشسیائی گھرانوں کو بجلی فراہم کرنا ہے۔ اس سے ہر سال تقریباً 13000 ٹن سی او2 کے اخراج سے بچا جا سکے گا اور ماریشس کو آب و ہوا میں منفی تبدیلی کے اثرات کو کم کرنے میں مدد ملے گی۔ آج کی تقریب میں دو کلیدی دو طرفہ معاہدوں کا تبادلہ بھی شامل ہے۔ ایک معاہدہ ہندوستان کی حکومت کی جانب سے ماریشش کی حکومت کو میٹرو ایکسپریس اور دیگر بنیادی ڈھانچے کے پروجیکٹوں کیلئے 190 میلن ڈالر کے لائن آف کریڈٹ سے متعلق اور دوسرا چھوٹ ترقیاتی منصوبوں پر عمل در آمد کے بارے میں مفاہمت نامہ ہے۔

 

کووڈ۔19 سے پیدا آزمائشوں کے باوجود ہندوستان اور ماریشش کے ترقیاتی ساجھیداری کے پروجیکٹوں کی تیزی سے پیش رفت ہوئی ہے۔ 2019 میں وزیر اعظم مودی اور وزیر اعظم جگن ناتھ نے ورچوئل طریقے سے ماریشش میں میاترو ایکسپریس پروجیکٹ اور ایک نئے ای این ٹی اسپتال کا افتتاح کیا تھا۔ اسی طرح جولائی 2020 میں ماریشش کی سپریم کورٹ کی نئی عمارت کا افتتاح بھی دونوں وزرائے اعظم نے مشترکہ طور پر ورچوئل طریقے سے کیا تھا۔

ہندوستان اور ماریشش کے قریبی تعلقات کی جڑیں ہماری تاریخ، نسل و نسب، ثقافت اور زبان کی یکسانیت کے سبب مضبوط ہیں۔ اس کی عکاسی دونوں ملکوں کے درمیان کی ترقیاتی ساجھیداری سے ہوتی ہے کیونکہ ماریشش بحر ہند خطے میں ہندوستان کا کلیدی ترقیاتی ساجھیدار ہے۔ آج کی تقریب سب کا ساتھ، سب کا وکاس، سب کا وشواس، سب کا پریاس کے جذبے کا مظہر ، اور اس کامیاب قدیم ساجھیداری میں ایک اور سنگ میل ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *


ہمارے بارے میں

www.maeeshat.in پر ہم اقلیتوں خصوصا  مسلم دنیا میں کاروبار کو متعارف کرانے اور فروغ دینے کا ارادہ رکھتے ہیں جو حلال اور حرام کے حوالے سے اپنے آپ کو ممتاز کرتے ہیں۔ شروع سے ہی اس جریدے/ویب سائٹ نے مسلمان صنعت کاروں اور تاجروں کو قائل کیا ہے کہ وہ ہندوستانی معیشت کو مضبوط بنائیں اور دوسرے کارپوریٹ کے ساتھ اپنے تعلقات کو مزید فروغ دیں۔


CONTACT US

CALL US ANYTIME




نیوز لیٹر