دہلی کے چار اضلاع میں ضلع سینک بورڈ قائم کیا جائے گا: کیجریوال

Zila_Sainik_Board_to_be_established_in_four_districts_of_Delhi

وزیر اعلی اروند کیجریوال کی صدارت میں ریاستی کابینہ نے دہلی میں چار ضلع سینک بورڈ قائم کرنے کی تجویز کو منظوری دی۔ ریونیو ڈپارٹمنٹ کی جانب سے چار ضلع سینک بورڈ کے قیام کی تجویز کابینہ میں رکھی گئی۔

راجیہ سینک بورڈ کے تحت یہ چار ضلع سینک بورڈ دہلی میں جنوب مغربی دہلی، مشرقی دہلی، شمال مغربی دہلی اور وسطی دہلی میں قائم کیے جائیں گے۔

چار سینک بورڈز پر ہر سال تقریباً 16 کروڑ روپے خرچ ہوں گے۔ دہلی حکومت ریاستی اور ضلع سینک بورڈ کے کل اخراجات کا 40 فیصد برداشت کرے گی۔ خیال رہے کہ ضلع سینک بورڈ ملک کی مسلح افواج کے حاضر سروس فوجیوں، ان کے خاندانوں، ریٹائرڈ فوجیوں، شہیدوں کی بیواؤں اور ان کے زیر کفالت افراد کو فلاحی، روزگار، بحالی، تعلیم اور دیگر فائدہ مند اسکیمیں فراہم کرنے کا کام کرتا ہے۔

ریٹائرڈ فوجیوں کے خاندانوں کی فلاح و بہبود کی نگرانی کرنا اور مقامی انتظامیہ یا دفاعی حکام کے ساتھ ان کے معاملات کی نمائندگی کرنے میں ان کی مدد کرنا، ملازمت کے مسئلے سے لے کر دیگر مسائل تک کے مسائل کو حل کرنا، پنشن کے مسائل، زمین کے تنازعات کو حل کرنے میں مدد کرنا ضلع سینک بورڈ کرتا ہے۔نیز خاندان کی دیکھ بھال، طبی، عدالت سے متعلق معاملات میں مدد فراہم کرنے کا کام بھی اس کے تحت ہے۔

دہلی حکومت کے مطابق ریٹائرڈ فوجیوں کی مشکلات ماضی کی نسبت تیزی سے بڑھ رہی ہیں۔اسے سماجی واقتصادی تبدیلی، مشترکہ خاندان کی ٹوٹ پھوٹ، جاب مارکیٹ میں سخت مسابقت، زندگی گزارنے کی بڑھتی ہوئی قیمتوں اور ادویات اور اسکولنگ کی سہولیات کی فراہمی کی  مشکلات کا سامنا ہے۔ اس لیے بڑھتے ہوئے چیلنجوں سے نمٹنے کے لیے تنظیم کو بحال کرنے کی ضرورت ہے۔

دہلی میں راجیہ سینک بورڈ ہونے کی وجہ سے ان ریٹائرڈ فوجیوں اور ان کے اہل خانہ کو مسائل سے نمٹنے میں کافی پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ اس کے پیش نظر دہلی میں چار ضلع سینک بورڈ بنانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ اس سے ان کے مسائل کافی حد تک کم ہوں گے۔

راجیہ سینک بورڈ میں آنے والے زیادہ تر ملازمین عمر رسیدہ ہیں اور انہیں صحت کے مسائل کا سامنا ہے۔ اس لیے چار ضلع سینک بورڈ کے قیام سے نہ صرف راجیہ سینک بورڈ دہلی میں مسائل کا سامنا کرنے والے تمام بزرگوں کی مدد ہوگی، بلکہ حکومت ان اہلکاروں کی ضروریات کو زیادہ موثر اور مؤثر طریقے سے پورا کرنے میں بھی کامیاب ہوگی۔

تجویز کے مطابق جن اضلاع میں ریٹائرڈ فوجیوں کی تعداد 7500 سے زیادہ ہے، ریاستی حکومت کو ضلع سینک بورڈ قائم کرنے کا حق حاصل ہے۔ قائم کیے جانے والے ضلع سینک بورڈ میں کل 11 افسران اور ملازمین کی تقرری کی گئی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *


ہمارے بارے میں

www.maeeshat.in پر ہم اقلیتوں خصوصا  مسلم دنیا میں کاروبار کو متعارف کرانے اور فروغ دینے کا ارادہ رکھتے ہیں جو حلال اور حرام کے حوالے سے اپنے آپ کو ممتاز کرتے ہیں۔ شروع سے ہی اس جریدے/ویب سائٹ نے مسلمان صنعت کاروں اور تاجروں کو قائل کیا ہے کہ وہ ہندوستانی معیشت کو مضبوط بنائیں اور دوسرے کارپوریٹ کے ساتھ اپنے تعلقات کو مزید فروغ دیں۔


CONTACT US

CALL US ANYTIME




نیوز لیٹر