’نئے ڈیجیٹل ذرائع کی تلاش‘ گوگل کے ہندوستان سے مذاکرات

GOOGLENEW

نیو دہلی : الفابیٹ انٹرنیشنل کی کمپنی گوگل کی اوپن ای کامرس مارکیٹ کے منصوبے میں شمولیت کے لیے  حکومت ہند سے بات چیت جاری ہے۔ برطانوی خبر رساں ادارے روئٹرز نے جمعے کو ذرائع کے حوالے سے انڈیا کے اوپن نیٹ ورک فار ڈیجیٹل کامرس (او این سی) کے ساتھ جاری مذاکرات کی خبر دی ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ ماہ انڈیا نے او این ڈی سی پروگرام کی سافٹ لانچنگ کی تھی۔  اس اقدام کے ذریعے  ہندوستان کی حکومت تیزی سے ترقی کرتی ای کامرس مارکیٹ میں امریکی کمپنیوں ایمیزون اور والمارٹ کی اجارہ داری کو ختم کر کے برابر مقابلے کا ماحول پیدا کرنا چاہتی ہے۔ حکومت کے تخمینے کے مطابق ملک کی ای کامرس مارکیٹ کا حجم سال 2021 میں 55 ارب ڈالرز سے زیادہ رہا جبکہ اس دہائی کے آخر میں یہ مارکیٹ 350 ارب ڈالرز کی حد کو عبور کر جائے گی۔

او این ڈی سی کے چیف ایگزیکٹو ٹی کوشے نے روئٹرز سے بات کرتے ہوئے تصدیق کی ہے کہ اس منصوبے کے حوالے سے بات چیت کرنے والی کمپنیوں میں گوگل بھی شامل ہے۔

حکومت کی جانب سے رقوم کی آن لائن منتقلی کے حوالے سے نئے اقدامات کے بعد گوگل کو بات چیت آگے بڑھانے کا موقع ملا ہے۔ واضح رہے کہ گوگل نے ابھی تک ایمیزون کی طرح صارفین کے آرڈز کی ڈیلیوری کے کاروبار کا آغاز نہیں کیا ہے۔

گوگل کے ایک ترجمان نے کمپنی کے انڈیا کی حکومت سے مذاکرات پر تبصرہ کرنے سے گریز کرتے ہوئے بتایا کہ ’ہم چھوٹے اور بڑے کاروباروں کے لیے نئے ڈیجیٹل ذرائع کی تلاش اور ’گوگل پے‘ کے ذریعے ادائیگیوں کو آسان بنانے کے بارے میں پرعزم ہیں۔‘

ہندوستان  کی حکومت اپنے اوپن ای کامرس مارکیٹ کے منصوبے کے ذریعے آن لائن کاروبار کرنے والے افراد اور کمپنیوں کے لیے برابر مواقعوں کا ماحول پیدا کرنا چاہتی ہے۔ ہندوستان کے او این ڈی سی پروگرام کے تحت تین کروڑ سیلرز اور آئن لائن کاروبار کرنے والے ایک کروڑ پلیٹ فارمز کو سہولت فراہم کی جائے گی اور یہ پروگرام اگست سے انڈیا کے کم از کم 100 شہروں میں فعال ہو جائے گا

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *


ہمارے بارے میں

www.maeeshat.in پر ہم اقلیتوں خصوصا  مسلم دنیا میں کاروبار کو متعارف کرانے اور فروغ دینے کا ارادہ رکھتے ہیں جو حلال اور حرام کے حوالے سے اپنے آپ کو ممتاز کرتے ہیں۔ شروع سے ہی اس جریدے/ویب سائٹ نے مسلمان صنعت کاروں اور تاجروں کو قائل کیا ہے کہ وہ ہندوستانی معیشت کو مضبوط بنائیں اور دوسرے کارپوریٹ کے ساتھ اپنے تعلقات کو مزید فروغ دیں۔


CONTACT US

CALL US ANYTIME




نیوز لیٹر