بنیادی صفحہ / خبریں / کسان احتجاج: کسانوں نے 6 فروری کو 3 گھنٹے کے لیے ملک بھر میں سڑکیں بند کرنے کا اعلان کیا

کسان احتجاج: کسانوں نے 6 فروری کو 3 گھنٹے کے لیے ملک بھر میں سڑکیں بند کرنے کا اعلان کیا

farmer

نئی دہلی، فروری 2: اے این آئی کے مطابق پیر کے روز دہلی کے سرحدی مقامات پر سنٹر کے زرعی قوانین کے خلاف احتجاج کرنے والے کسانوں نے کہا ہے کہ وہ ہفتے کے روز پورے ملک میں تین گھنٹے سڑکیں بند رکھیں گے۔

کسان یونینوں نے اعلان کیا ہے کہ 6 فروری کو ملک گیر احتجاج کیا جائے گا۔ کسان رہنما بلبیر سنگھ راجیوال نے کہا ’’ہم دوپہر 12 سے شام 3 بجے کے درمیان سڑکیں بند کریں گے۔‘‘

سوراج انڈیا کے صدر یوگیندر یادو نے کہا کہ حکومت نے نئے بجٹ میں ہندوستان کے فوڈ کارپوریشن کو مالی مدد فراہم نہیں کی ہے۔

انھوں نے کہا ’’پچھلے سال ایم ایس پی پر فصلوں کی خریداری کے لیے ایف سی آئی کو قرضوں کے ذریعے مالی اعانت کے لیے بجٹ 1،36،600 کروڑ روپے مختص تھا۔ لیکن 85،000 روپے سے بھی کم خرچ ہوا۔ اس سال کوئی رقم مختص نہیں کی گئی ہے۔ ایسی چیزیں کسانوں کو یہ سوچنے پر مجبور کرتی ہیں کہ یہ ایف سی آئی کو بند کرنے کی سازش ہے۔‘‘

انھوں نے مزید کہا کہ کسان ریاستی اور قومی شاہراہوں کی ناکہ بندی کریں گے۔

احتجاج کرنے والے کسان احتجاجی مقامات پر انٹرنیٹ اور بجلی کی فراہمی پر پابندی پر بھی مشتعل ہیں۔ معلوم ہو کہ سنٹر نے سنگھو، غازی پور اور ٹکری سرحدوں کے قریب انٹرنیٹ خدمات پر پابندی کو منگل کی رات تک بڑھا دیا ہے۔

اس سے قبل یوم جمہوریہ کی ٹریکٹر ریلی میں ہونے والے تشدد کے پیش نظر کسانوں نے بجٹ کے دن پارلیمنٹ تک مارچ کرنے کے منصوبے کو ملتوی کردیا تھا۔ دہلی پولیس نے تشدد کے الزام میں اب تک 44 مقدمات درج کرکے 122 افراد کو گرفتار کیا ہے۔

تعارف: نمائندہ خصوصی

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*