ہندوستان نے افغانستان کے لئے نئی ویزا پالیسی جاری کی

طالبان

نئی دہلی: حکومت نے افغانستان میں بگڑتے حالات کے پیش نظر وہاں سے آنے کے خواہش مند لوگوں کے لئے ویزا کے عمل کو آسان بنانے کا فیصلہ کیا ہے اور ہنگامی حالات میں فوری ویزا جاری کرنے کے لئے آن لائن درخواست اور نپٹارے کا نیازمرہ بنایا ہے۔
مرکزی وزیر داخلہ نے ٹوئٹ کرکے کہا ’’وزارت نے افغانستان کی موجودہ صورتحال کو دیکھتے ہوئے ویزا التزام کا جائزہ لیا ہے۔ ہندوستان میں داخلے لئے ویزا درخواستوں کو تیزی سے نمٹانے کےلئے الیکٹرانک ویزا کا ایک نیا زمرہ، جسے ’ای۔ ایمرجنسی ایکس مسلینیس‘ کے نام سے جانا جائے گا، بنایا گیا ہے‘‘۔
واضح رہے کہ موجودہ وقت میں افغانستان کی صورتحال کافی خراب ہے۔ وہاں پر طالبان نے گزشتہ اتوار کو اشرف غنی حکومت سے اقتدار اپنے قبضے میں لے لیا تھا اور غنی کو ملک چھوڑکر جانا پڑا تھا۔
فضائیہ کا طیارہ 140 ہندوستانیوں کو لے کر کابل سے روانہ
ہندوستانی فضائیہ کا ایک خصوصی طیارہ 140 ہندوستانیوں کو لے کر افغانستان کے دارالحکومت کابل سے روانہ ہو گیا ہے۔ ذرائع کے مطابق ہندوستانی فضائیہ کا سی 17 گلوب ماسٹر طیارہ میں چار صحافیوں کے ساتھ انڈو تبت بارڈر پولیس (آئی ٹی بی پی) کے اہلکاروں اورکابل میں واقع ہندوستانی سفارت خانہ کے عملے اور افسران سوار ہیں ۔ بتایا جا رہا ہے کہ یہ طیارہ ایران کے راستے ہندوستان پہنچے گا کیونکہ یہ طیارہ پاکستان کی فضائی حدود استعمال نہیں کرے گا۔ یہ طیارہ آج دوپہر غازی آباد میں آئی اے ایف کے ہنڈن ایئر بیس پر اترے گا۔
قبل ازیں وزارت خارجہ نے بتایا تھا کہ افغانستان میں بگڑتی صورتحال کے پیش نظر حکومت نے کابل میں ہندوستانی سفارت خانے کے تمام ملازمین اور سفیر کو فوری واپس بلانے کا فیصلہ کیا ہے۔ وزارت خارجہ کے ترجمان ارندم باگچی نے منگل کو ٹوئٹ کیا ’’موجودہ صورتحال کے پیش نظر یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ کابل میں ہندوستانی سفارت خانے کا تمام عملہ اور ہمارے سفیر فوری طور پر ہندوستان واپس آئیں گے۔‘‘ ہندوستان نے یہ فیصلہ گزشتہ اتوار کو افغانستان میں اشرف غنی حکومت کی برطرفی اور وہاں سکیورٹی کی بگڑتی صورتحال کے پیش نظر کیا ہے۔
کابل ہوائی اڈہ پھر سے کھولا گیا
امریکہ نے کہا ہے کہ افغانستان کی راجدھانی کابل واقع ہوائی اڈے کو طیاروں کی آمد و رفت کے لئے پیر کے روز مقامی وقت کے مطابق دوپہر تین بجکر 35 منٹ پر دوبارہ سے کھول دیا گیا۔
امریکی فوج کے بریگیڈیئر ولیم نے پیر کو یہ اطالع دی۔ انہوں نے کہا ’’افغانستان کے وقت کے مطابق دوپہر 3 بجکر 35 منٹ ہوائی راستہ کو طیاروں کی پروازوں کو دوبارہ سے کھول دیا گیا۔ امریکی فوجیوں کے ساتھ پہلا سی۔ 17 طیارہ ہوائی اڈے پر اترا اور اگلا سی۔ 7 طیارہ لینڈ کرنے کی تیاری کررہا ہے‘‘۔
’چین افغانستان میں خانہ جنگی کو روکنے کے لئے امریکہ کے ساتھ تعاون کے لئے تیار‘
چین نے کہا ہے کہ وہ افغانستان میں خانہ جنگی کو روکنے اور ملک کو دوبارہ دہشت گردوں کی پناہ گاہ بننے سے روکنے کے لیے امریکہ کے ساتھ تعاون کے لیے تیار ہے۔ چینی وزیر خارجہ وانگ یی نے امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن کے ساتھ ٹیلی فون پر بات چیت میں افغانستان پر تعاون پر اتفاق کیا۔
وزارت خارجہ نے مسٹر وانگ کے حوالے سے کہا ’’چین افغان مسئلے کے سادہ حل کے نفاذ کی سہولت کے لیے امریکہ کے ساتھ تعاون کے لیے تیار ہے ، تاکہ یہ یقینی بنایا جا سکے کہ افغانستان میں کوئی نئی خانہ جنگی یا انسانی تنازع نہ ہو اور وہ دہشت گردی کے گڑھ اورمہاجرین کی پناہ گاہ میں تبدیل نہ ہو‘‘۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *


ہمارے بارے میں

www.maeeshat.in پر ہم اقلیتوں خصوصا  مسلم دنیا میں کاروبار کو متعارف کرانے اور فروغ دینے کا ارادہ رکھتے ہیں جو حلال اور حرام کے حوالے سے اپنے آپ کو ممتاز کرتے ہیں۔ شروع سے ہی اس جریدے/ویب سائٹ نے مسلمان صنعت کاروں اور تاجروں کو قائل کیا ہے کہ وہ ہندوستانی معیشت کو مضبوط بنائیں اور دوسرے کارپوریٹ کے ساتھ اپنے تعلقات کو مزید فروغ دیں۔


CONTACT US

CALL US ANYTIME




نیوز لیٹر