دہلی: عمارت میں لگی آگ، 27 افراد ہلاک 50زخمی ،27لاپتہ

DELHI FIRE

نئی دہلی :دہلی میں منڈکا میٹرو اسٹیشن کے قریب ایک عمارت میں آگ لگ گئی۔ حادثے میں 27 افراد ہلاک ہو گئے ہیں ۔ت

ین منزلہ تجارتی عمارت جل کر خاک  ہوگئی ہے۔

مرنے والوں میں فائر بریگیڈ کے دو ملازمین بھی شامل ہیں۔

اس کے ساتھ ہی 10 افراد شدید زخمی ہو گئے۔ 19 افراد لاپتہ بتائے جاتے ہیں۔

پولیس نے عمارت کے مالکان ہریش گوئل اور ورون گوئل کو جمعہ کی دیر رات اپنی تحویل میں لے لیا۔

پولیس نے موقع پر پہنچ کر کھڑکیوں کے شیشے توڑ کر عمارت کے اندر پھنسے لوگوں کو نکالا۔ 50سےزیادہ زخمیوں کو اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔عمارت کی پہلی منزل پر سی سی ٹی وی فیکٹری اور گودام ہے، اس میں لگی آگ نے شدید شکل اختیار کر لی اور پوری عمارت کو اپنی لپیٹ میں لے لیا۔ فیکٹری میں مزدوروں کی بڑی تعداد کام کر رہی تھی۔ بہت گنجان جگہ ہونے کی وجہ سے ریسکیو آپریشن میں کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔

آگ لگنے کی اطلاع جمعہ کی شام 4.40 بجے ملی تھی۔ تقریباً 7 گھنٹے بعد آگ پر قابو پالیا گیا۔ تاہم رات 12 بجے دوبارہ آگ بھڑکنے لگی جس پر وہاں موجود فائر فائٹرز نے قابو پالیا۔ ریسکیو ٹیم نے عمارت کی کھڑکیوں کے شیشے توڑ کر پھنسے افراد کو نکالا۔

ریسکیو آپریشن جلد شروع نہیں ہو سکا کیونکہ عمارت میں داخلے اور باہر نکلنے کا راستہ ایک جیسا تھا۔ زخمیوں کو سنجے گاندھی میموریل اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ عمارت کی تین میں سے دو منزلوں کی تلاش مکمل کر لی گئی ہے۔ تیسری منزل کی تلاش جاری ہے۔ گراؤنڈ فلور کے علاوہ عمارت کی تمام منزلوں پر موجود ہر چیز راکھ کا ڈھیر بن گئی ہے۔

عمارت کی کھڑکیوں سے نکلنے والے دھویں کے درمیان لوگوں کو جے سی بی مشینوں اور کرینوں کی مدد سے نیچے لایا گیا، جب کہ کچھ لوگ رسیوں کی مدد سے نیچے بھی آئے۔ دہلی فائر سروس کے ڈپٹی چیف فائر آفیسر سنیل چودھری نے کہا کہ کچھ لوگوں نے خود عمارت سے چھلانگ لگا دی جس سے وہ زخمی ہو گئے۔ اسے ہسپتال لے جایا گیا ہے۔ آگ لگنے کی وجہ شارٹ سرکٹ بتائی جاتی ہے۔

فائر بریگیڈ کی 27 گاڑیاں موقع پر پہنچ چکی ہیں۔ آگ پر قابو پا لیا گیا ہے۔ اس کے ساتھ زخمیوں کو فوری علاج کی فراہمی کے لیے ایمبولینسز کا بھی موقع پر انتظام کیا گیا ہے۔ آس پاس کے دیہات کے لوگ بھی موقع پر پہنچ گئے اور لوگوں کو بچانے میں مدد کی۔

عمارت کی کھڑکیوں سے نکلنے والے دھوئیں کے درمیان لوگوں کو جے سی بی مشین کی مدد سے نیچے لایا گیا جبکہ کچھ لوگ رسی کی مدد سے بھی نیچے آئے۔ اس وقت فائر بریگیڈ کی 9 گاڑیاں موقع پر موجود ہیں جو آگ پر قابو پانے کی کوشش کر رہی ہیں۔ اس کے ساتھ زخمیوں کو فوری علاج کی فراہمی کے لیے ایمبولینسز کا بھی موقع پر انتظام کیا گیا ہے۔فائر ڈپارٹمنٹ کے حکام کے مطابق آگ لگنے کی اطلاع شام 4.40 بجے ملی جس کے بعد 20 فائر ٹینڈر موقع پر پہنچ گئے۔

awaz

دل دہلانے والا منظر


دہلی پولیس نے ایک شخص کو گرفتار کرلیا۔ دہلی پولیس نے کہا کہ میٹرو اسٹیشن کے ستون 544 کے قریب بنی یہ عمارت 3 منزلہ کمرشل عمارت ہے، جو کمپنیوں کو دفتر کی جگہ کے طور پر کرائے پر دی گئی ہے۔ پولیس نے بتایا کہ آگ عمارت کی پہلی منزل سے شروع ہوئی جس میں سی سی ٹی وی کیمرہ اور راؤٹر بنانے والی کمپنی موجود ہے۔ پولیس نے کمپنی کے مالک کو حراست میں لے لیا ہے۔

دہلی پولیس نے کہا کہ میٹرو اسٹیشن کے ستون 544 کے قریب بنی یہ عمارت 3 منزلہ کمرشل عمارت ہے، جو کمپنیوں کو دفتر کی جگہ کے طور پر کرائے پر دی گئی ہے۔ پولیس نے بتایا کہ آگ عمارت کی پہلی منزل سے شروع ہوئی جس میں سی سی ٹی وی کیمرہ اور راؤٹر بنانے والی کمپنی موجود ہے۔ پولیس نے کمپنی کے مالکان ہریش گوئل، ورون گوئل کو گرفتار کر لیا ہے۔

اس لیے حادثے نے بڑی شکل اختیار کر لی

مقامی لوگوں نے بتایا کہ عمارت میں جگہ کم اور لوگ زیادہ کام کر رہے تھے۔ ایسے میں جب آگ لگی تو وہاں افراتفری مچ گئی، جس کی وجہ سے لوگ خود سے بچ نہ سکے اور حادثے کا شکار ہو گئے۔

awaz

آگ کا دریا بن گیا جس نے 289جانیں نگل لیں 


تقریباً 150 افراد کو بچا لیا گیا

جس عمارت میں آگ لگی وہاں کئی کمپنیوں کے دفاتر تھے۔ یہاں سے تقریباً 150 لوگوں کو بچایا گیا۔ اس کے لیے 100 افراد کی ٹیم تعینات کی گئی تھی۔ دہلی پولیس نے موقع سے سنجے گاندھی میموریل اسپتال تک گرین کوریڈور بنایا، تاکہ زخمیوں کو تیزی سے اسپتال پہنچایا جاسکے۔ اس دوران ڈی ایم آفس نے ہیلپ لائن نمبرز 011-25195529، 011-25100093 جاری کیے ۔

مرنے والوں کی تعداد بڑھ سکتی ہے

دہلی کے ڈی سی پی سمیر شرما نے کہا، ‘عمارت میں بچاؤ کا کام ابھی مکمل نہیں ہوا ہے۔ ہوسکتا ہے کہ یہاں کچھ اور لاشیں ملیں۔ اب تک جو لاشیں ملی ہیں وہ اس حالت میں ہیں کہ ان کی شناخت مشکل ہے۔ اس لیے پولیس فرانزک ٹیم کی مدد لے گی۔ لاپتہ افراد کے ساتھ ان کے نمونے میچ کرائے جائیں گے، تاکہ مرنے والوں کی شناخت ہوسکے۔ لاپتہ افراد کی فہرست تیار کی جائے گی۔

صدر جمہوریہ سے وزیر اعظم تک  ۔سب افسرہ 

صدر رام ناتھ کووند، وزیر اعظم نریندر مودی اور دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے اس آتشزدگی کے اس واقعہ پر دکھ کا اظہار کیا ہے۔

وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا- مجھے لوگوں کی موت سے بہت دکھ ہوا ہے۔ میری ہمدردیاں سوگوار خاندانوں کے ساتھ ہیں۔ میں زخمیوں کی جلد صحت یابی کی دعا کرتا ہوں۔

وزیر داخلہ امت شاہ نے حادثے پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ میں مسلسل عہدیداروں سے رابطے میں ہوں۔ کانگریس لیڈر راہل گاندھی نے بھی حادثے پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔

جس کمپنی کی عمارت میں آگ لگی اس کے پاس فائر این او سی بھی نہیں تھا۔

پی ایم ریلیف فنڈ سے مرنے والوں کے لواحقین کو دو دو لاکھ روپے اور زخمیوں کو پچاس پچاس ہزار روپے دینے کا اعلان کیا گیا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *


ہمارے بارے میں

www.maeeshat.in پر ہم اقلیتوں خصوصا  مسلم دنیا میں کاروبار کو متعارف کرانے اور فروغ دینے کا ارادہ رکھتے ہیں جو حلال اور حرام کے حوالے سے اپنے آپ کو ممتاز کرتے ہیں۔ شروع سے ہی اس جریدے/ویب سائٹ نے مسلمان صنعت کاروں اور تاجروں کو قائل کیا ہے کہ وہ ہندوستانی معیشت کو مضبوط بنائیں اور دوسرے کارپوریٹ کے ساتھ اپنے تعلقات کو مزید فروغ دیں۔


CONTACT US

CALL US ANYTIME




نیوز لیٹر