خوردنی تیل کے امپورٹ پرڈیوٹی ختم

OIL

نئی دہلی: خوردنی تیل کی قیمتوں پر قابو پانے کے لیے حکومت ہند نے منگل کو ایک اہم فیصلہ لیا ہے۔ حکومت نے مارچ 2024 تک سالانہ 20 ملین ٹن خام سویا بین اور سورج مکھی کے تیل کی درآمد پر کسٹم ڈیوٹی اور زرعی انفراسٹرکچر سیس کو ختم کرنے کا اعلان کیا ہے۔

وزارت خزانہ کی جانب سے جاری کردہ نوٹیفکیشن کے مطابق مالی سال 2022-23 اور 2023-24 میں سالانہ 20 لاکھ ٹن خام سویا بین اور سورج مکھی کے تیل پر درآمدی ڈیوٹی نہیں لگائی جائے گی۔

اس کا مطلب ہے کہ 31 مارچ 2024 تک مجموعی طور پر 8 ملین ٹن خام سویا بین تیل اور خام سورج مکھی کا تیل ڈیوٹی فری درآمد کیا جا سکتا ہے۔ اس سے مقامی سطح پر قیمتیں کم کرنے میں مدد ملے گی۔

وزارت خزانہ کے اس فیصلے پر عمل درآمد 25 مئی سے ہو گا۔ یہ فیصلہ ایک ایسے وقت میں کیا گیا ہے جب روس یوکرین جنگ کی وجہ سے یوکرین سے سورج مکھی کے تیل کی درآمد بری طرح متاثر ہوئی ہے۔ ہندوستان اپنی ضرورت کا تقریباً 90 فیصد یوکرین اور روس سے درآمد کرتا ہے۔

گزشتہ دو ماہ سے ہندوستانی کمپنیاں سورج مکھی کا تیل درآمد کرنے کے لیے نئے ممالک اور منڈیوں کی تلاش میں ہیں۔ وزارت خزانہ کے مطابق اس فیصلے سے بین الاقوامی مارکیٹ سے خام سویا بین تیل اور خام سورج مکھی کے بیجوں کا تیل ہندوستان میں سستے داموں درآمد کرنا ممکن ہو جائے گا۔

اس سے قیمتوں کو کنٹرول کرنے میں مدد ملے گی اور صارفین کو ریلیف ملے گا۔ اس سے قبل پیر کو انڈونیشیا کی حکومت نے پام آئل کی برآمد پر پابندی اٹھا لی تھی۔ اس کے بعد ملک کے کئی شہروں میں خوردنی تیل کی قیمتوں میں معمولی کمی آئی ہے۔

سولویٹ ایکسٹریکٹرس آف انڈیا کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر بی وی مہتا نے کہا کہ حکومت کے اس فیصلے سے سویا بین تیل کی قیمت میں 3 روپے فی لیٹر کی کمی آئے گی۔ حکومت نے 20 لاکھ ٹن خام سویا بین اور سورج مکھی کے تیل کے لیے ڈیوٹی ریٹ کوٹہ سے متعلق نوٹیفکیشن جاری کر دیا ہے۔

مہتا نے کہا کہ ٹی آرکیو کے تحت کسٹم ڈیوٹی اور 5.5 فیصد کا زرعی انفراسٹرکچر ٹیکس ہٹا دیا جائے گا۔ اہم بات یہ ہے کہ تیل کی بڑھتی قیمتوں کے درمیان حکومت نے گزشتہ ہفتے پٹرول اور ڈیزل پر ایکسائز ڈیوٹی کم کر دی تھی۔ اس کے ساتھ ساتھ اسٹیل اور پلاسٹک کی صنعت میں استعمال ہونے والے کچھ خام مال پر درآمدی ڈیوٹی ختم کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *


ہمارے بارے میں

www.maeeshat.in پر ہم اقلیتوں خصوصا  مسلم دنیا میں کاروبار کو متعارف کرانے اور فروغ دینے کا ارادہ رکھتے ہیں جو حلال اور حرام کے حوالے سے اپنے آپ کو ممتاز کرتے ہیں۔ شروع سے ہی اس جریدے/ویب سائٹ نے مسلمان صنعت کاروں اور تاجروں کو قائل کیا ہے کہ وہ ہندوستانی معیشت کو مضبوط بنائیں اور دوسرے کارپوریٹ کے ساتھ اپنے تعلقات کو مزید فروغ دیں۔


CONTACT US

CALL US ANYTIME




نیوز لیٹر