مالی سال2021-22 میں جی ڈی پی 8.7 فیصد کی شرح سے بڑھی

GDPNEW

نئی دہلی: ملک میں چوتھی سہ ماہی کی شرح نمو کا ڈیٹا منگل کو جاری کیا گیا۔ مالی سال 2021-22 کی آخری سہ ماہی میں جی ڈی پی کی شرح نمو 4.1 فیصد رہی ہے۔جب کہ پورے مالی سال کی بات کریں تو یہ 8.7 فیصد رہی ہے۔

مسلسل چوتھے سال ملک میں اچھی مانسون کے اشارے کے درمیان ترقی کی یہ شرح ایک اچھی علامت ہے۔ تاہم کورونا کے دو سال بعد معیشت کے بعد صنعتی ترقی کی رفتار دوبارہ پٹری پر آ رہی ہے۔

منگل کو جاری کردہ سرکاری اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ2021-22 کی چوتھی سہ ماہی میں، ہندوستانی معیشت نے4.1 فیصد کی ترقی درج کی، جس کے نتیجے میں سالانہ ترقی کی شرح 8.7 فیصد تک پہنچ گئی ہے۔

تاہم، جنوری تا مارچ کی مدت میں شرح نمو اکتوبر-دسمبر 2021-22 کی پچھلی سہ ماہی میں 5.4 فیصد سے کم تھی۔ 2021-22 کی چوتھی سہ ماہی کے دوران ہندوستان کی اقتصادی ترقی میں سست روی کی وجہ کورونا وائرس کے اومیکرون ویرینٹ، عالمی سپلائی میں کمی اور اعلی ان پٹ لاگت کی وجہ سے پابندیاں تھیں۔

ایشیا کی تیسری بڑی معیشت نے ابھی کورونا وبا کی وجہ سے سست روی سے سنبھلنا ہی شروع کیا تھا کہ اس سال جنوری میں اومیکرون ویریئنٹس کے بڑھتے ہوئے کیس میں پابندیاں واپس لے لی گئیں۔

فروری میں یوکرین پر روس کے حملے نے بحران کو بڑھانے کا کام کیا۔ اس سے اشیاء کی قیمتوں میں اضافہ ہوا اور سپلائی متاثر ہوئی۔

قومی شماریاتی دفتر (این ایس او) کی طرف سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق مالی سال 2020-21 کے جنوری سے مارچ تک کی اسی مدت میں مجموعی گھریلو پیداوار (جی ڈی پی) میں 2.5 فیصد کا اضافہ ہوا۔

سرکاری اعداد و شمار کے مطابق، پورے سال 2021-22 کے لیے جی ڈی پی کی شرح نمو 8.7 فیصد رہی، جب کہ گزشتہ سال 2020-21 میں معیشت میں 6.6 فیصد کی کمی واقع ہوئی۔

تاہم مارچ 2022 کو ختم ہونے والے مالی سال کے لیے ترقی کا اعداد و شمارقومی شماریاتی دفترکی پیش گوئی سے کم رہا ہے۔ این ایس او نے اپنے دوسرے پیشگی تخمینہ میں یہ 8.9 فیصد رہنے کا تخمینہ لگایا تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *


ہمارے بارے میں

www.maeeshat.in پر ہم اقلیتوں خصوصا  مسلم دنیا میں کاروبار کو متعارف کرانے اور فروغ دینے کا ارادہ رکھتے ہیں جو حلال اور حرام کے حوالے سے اپنے آپ کو ممتاز کرتے ہیں۔ شروع سے ہی اس جریدے/ویب سائٹ نے مسلمان صنعت کاروں اور تاجروں کو قائل کیا ہے کہ وہ ہندوستانی معیشت کو مضبوط بنائیں اور دوسرے کارپوریٹ کے ساتھ اپنے تعلقات کو مزید فروغ دیں۔


CONTACT US

CALL US ANYTIME




نیوز لیٹر