حکومت PSUs سے 361 کروڑ روپے کے منافع حاصل کرتی ہے۔

dollars
حکومت نے SJVN، Antariksh Corporation of India اور Manganese Ore (India) Ltd سے بالترتیب 129 کروڑ روپے، 76 کروڑ روپے اور 33 کروڑ روپے ڈیویڈنڈ قسط کے طور پر حاصل کیے ہیں۔
سرمایہ کاری اور عوامی اثاثہ جات کے انتظام کے محکمے (DIPAM) کے سکریٹری توہین کانتا پانڈے نے اپنے آفیشل ٹویٹر اکاؤنٹ پر تفصیلات ٹویٹ کی ہیں۔
مرکز کو الیکٹرانکس کارپوریشن آف انڈیا لمیٹڈ، منرل ایکسپلوریشن کارپوریشن اور این بی سی سی سے بالترتیب 33 کروڑ، 34 کروڑ اور 56 کروڑ روپے ڈیویڈنڈ قسط کے طور پر موصول ہوئے ہیں۔

PSUs سے منافع کے لیے بجٹ کا تخمینہ 40,000 کروڑ روپے ہے۔

اب تک مرکز نے ان کے ذریعے 15,766 کروڑ روپے کمائے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *


ہمارے بارے میں

www.maeeshat.in پر ہم اقلیتوں خصوصا  مسلم دنیا میں کاروبار کو متعارف کرانے اور فروغ دینے کا ارادہ رکھتے ہیں جو حلال اور حرام کے حوالے سے اپنے آپ کو ممتاز کرتے ہیں۔ شروع سے ہی اس جریدے/ویب سائٹ نے مسلمان صنعت کاروں اور تاجروں کو قائل کیا ہے کہ وہ ہندوستانی معیشت کو مضبوط بنائیں اور دوسرے کارپوریٹ کے ساتھ اپنے تعلقات کو مزید فروغ دیں۔


CONTACT US

CALL US ANYTIME




نیوز لیٹر